Dr. Muhammad Ahsan Farooqi ڈاکٹر محمد احسن فاروقی

اردو کے نامور نقاد اور افسانہ، ناول نگار ڈاکٹر محمد احسن فاروقی 22 نومبر 1913ء کو قیصر باغ لکھنؤ میں پیدا ہوئے تھے۔ وہ لکھنؤ یونیورسٹی کے فارغ التحصیل تھے اور انہوں نے ’’رومانوی شاعروں پر ملٹن کے اثرات‘‘ کے موضوع پر پی ایچ ڈی کیا تھا۔
قیام پاکستان کے بعد وہ کراچی یونیورسٹی، سندھ یونیورسٹی اور بلوچستان یونیورسٹی کے شعبہ انگریزی سے وابستہ رہے۔ وہ اردو کے صف اول کے ناقدین میں شمار ہوتے ہیں، ان کی تنقیدی کتب میں اردو ناول کی تنقیدی تاریخ، ناول کیا ہے، ادبی تخلیق اور ناول، میر انیس اور مرثیہ نگاری اور تاریخ انگریزی ادب کے نام سرفہرست ہیں۔
ان کے ناولوں میں شام اودھ، آبلہ دل کا، سنگ گراں اور سنگم شامل ہیں جبکہ افسانوں کا مجموعہ رہ رسم آشنائی کے نام سے اشاعت پذیر ہوا۔

26 فروری 1978ء کو ڈاکٹر محمد احسن فاروقی کوئٹہ میں وفات پاگئے۔وہ کراچی میں خراسان باغ کے قبرستان میں آسودۂ خاک ہیں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

غالب کی ظرافت

ڈاکٹر احسن فاروقی کے ایک یادگار مضمون سے اقتباسات

“حیوانِ ظریف” اردو تنقید نگاری کا سب سے اہم الہامی فقرہ ہے ، کیونکہ اس کے ذریعہ حالی ؔ کی تنقیدی نظر ہمیں غالبؔ کی فطرت کے راز سے اس طرح آگاہ کرتی ہے جیسا کہ اردو کا کوئی تنقیدی فقرہ اب تک ہمیں کسی شاعر یا دیب کی فطرت سے آگاہ نہ کر سکا۔
غالب کو نہ معلوم کیا کیا کہا گیا ہے مگر سب غلط ، وہ حیوانِ ظریف کے سوا اور کچھ ہیں ہی نہیں ۔ان کو مفکر ، المیہ نگار ، غزل خواں ، مدح سرا ، تنقید نگار اور نہ معلوم کیا کچھ نہیں ثابت کیا گیا ہے ۔ وہ یہ سب ہیں مگر یہ سب باتیں ان کی ظریف حیوانیت کا حصہ ہیں ۔ وہ مکمل حیوان ِ ظریف ہیں ۔ جو اپنی ظرافت میں تمام کائنات کو ہی نہیں بلکہ ہر قسم کے جذباتی تاثرات کو لے لیتے ہیں۔
یوں تو دنیا میں لاکھوں قسم کے ظریف ہوئے مگر مکمل حیوانِ ظریف اگر ادب میں کوئی اور ہوا تو وہ ولیم شیکسپیئر تھا ۔ یہ دو ہی اور تیسرا شاید گوئٹے مکمل حیوانِ ظریف ہوئے ۔
مکمل حیوانِ ظریف کیا ہوتا ہے ۔؟ اس کا اندازہ لگانے کیلئے شیکسپیئر سے شروع کیجئے ۔
شیکسپیئر کی سب سے عظیم تصنیف جو تمام یورپ کی بھی عظیم ترین تصنیف ہے وہ “کنگ لیئر” ہے ۔ اس تصنیف میں المیہ نگاری اپنے کمال پر پہنچتی ہے ، مگر لیئر کا المیہ کچھ نہیں رہ جاتا ۔ اگر اس میں سے اس کے فول کے مزاح کو نکال لیجئے ۔ کلاسیکی نقاد اٹھارویں صدی تک شیکسپیئر کو طربیہ نگار ہی مانتے رہے اور اس کی المیہ نگاری سے انکار ہی کرتے رہے ۔ ظاہر ہے شیکسپیئر یونانی المیہ نگاروں کی سی فطرت ہر گز نہیں رکھتا تھا ۔ مگر وہ یونانی طربیہ نگاروں کی طرح کا بھی نہیں تھا ۔ وہ نشاط الثانیہ کی روح تھا جو بنیادی طور ظریف تھی ۔ مگر جس کی ظرفت کے دائرے میں ہر قسم کے تاثرات آ جاتے تھے ۔ لیئر کی تکالیف کے ساتھ آسمان و زمین متزلزل ہیں ۔ مگر اس حد سے زیادہ تاریک عالم میں فول ہر جگہ اور ہر وقت اپنی مزاح کی پھلجڑیاں ہی چھوڑ رہا ہے ۔ اس ڈرامے کا مصنف کیا ہے۔؟ حیوانِ ظریف ، مکمل حیوانِ ظریف اور کچھ نہیں ۔

غالب کی ہستی بھی یہی کچھ کرتی نظر آتی ہے ۔ یورپ کے اور ہمارے ادب کے بنیادی فرق کاخیال رکھ کر دیکھئے ۔ یورپ کا ادب زیادہ تر خارجی ، ہمارا ادب زیادہ تر داخلی ۔ شیکسپیئر بھی سامنے آئینہ رکھتا ہے ، غالب خود اپنے سامنے آئینہ رکھتا ہے ۔ غالب کی فطرت میں بھی لیئر اور اس کا فول ساتھ ساتھ چل رہے ہیں ۔ اگر ایک کو الگ کر دیا جائے تو دوسرا بے معنی ہو جاتا ہے ۔
غالب کی زندگی کنگ لیئر کا سا المیہ ہے ، مگر المیہ کے ہر اہم جزو یا موقع پر حیوانِ ظریف کی فطرت بھی چمکتی نظر آتی ہے ۔
وبا ضرور ایک المیہ ہے ، اس کے المناک مناظر غالب کے سامنے ضرور ہوں گے ۔ مگر اس کے بابت وہ کیا لکھتے ہیں ۔
“وبا تھی کہاں جو میں لکھوں کہ اب کم ہے یا زیادہ ۔ ایک چھیاسٹھ برس کا مرد اور ایک چونسٹھ برس کی عورت ۔ ان دونوں میں سے کوئی بھی مرتا تو ہم جانتے کہ وبا تھی ۔ تف بریں وبا”

امراؤ سنگھ کی دوسری بیوی کا انتقال ضرور المناک تھا ۔مگر غالب اس پر لکھتے ہیں۔
“امراؤ سنگھ کے حال پر اس واسطے مجھ کو رحم اور اپنے واسطے رشک آیا ۔ اللہ اللہ ایک وہ ہیں کہ دو بار ان کی بیڑیاں کٹ چکی ہیں اورایک ہم ہیں کہ ایک اوپر پچاس برس سے جو پھانسی کا پھندا گلے میں پڑا ہے ، نہ ہی پھندا ٹوٹتا ہے نہ دم نکلتا ہے ۔”

غدر سے بڑا المیہ شاید ہی کوئی اور غالب کے سامنے گزرا ہو ۔ اس کے درمیان غالب بھی لیئر کی طرح ہیتھ پر پھٹے کپڑے شکستہ حال کھڑے ہیں اور آسمان سے تاریکی میں ، بجلی تڑپ تڑپ کر پیڑوں کو جلا کر خاک کر رہی ہے مگر ان کی فطرت میں چھپا ہوا فول اپنی اڑانے سے نہیں چوکتا ۔ غالب کے غدر کے زمانے والے مکاتیب کو “غدر کے واقعہ ہائلہ کی مرثیہ خوانی ” کہا گیا ہے ، مگر دیکھئے اس مرثیہ خوانی میں کتنی مزاح نگاری ہے ۔
“میاں حقیقت حال اس سے زیادہ نہیں ہے کہ اب تک جیتا ہوں ۔ بھاگ نہیں گیا ۔ نکالا نہیں گیا ۔ معرض باز پرس میں نہیں آیا ۔ آئندہ دیکھئے کیا ہوتا ہے ۔”

غالب ایک حد تک اس المیہ سے بچے ہوئے اس کا منظر ہی دیکھ رہے ہیں مگر اس کی زد میں بھی آ جاتے ہیں اور سکے لکھنے کے الزام میں “پنشن بھی گیا اور ریست کا نام و نشان خلعت و دربار بھی مٹا ۔”
مگر اس عالم میں آ کر ان کے خطوط میں مزاح کا رنگ اور بھی تیز ہو گیا ۔ لکھتے ہیں ۔
” میں نے سکہ نہیں کہا ، اگر کہا تو اپنی جان اور حرمت بچانے کو کہا ۔ یہ گناہ نہیں ہے ۔ اور اگر گناہ بھی ہے تو کیا ایسا سنگین ہے کہ ملکہ معظمہ کا اشتہار بھی اسے مٹا نہ سکے ۔ سبحان اللہ ! گولہ انداز کا بارود بنانا اور توپیں لگانا اور بینک گھر اور میگزین لوٹنا معاف ہو جائے گا اور شاعر کے دو مصرعے معاف نہ ہوں ۔ ہاں صاحب گولہ انداز کا بہنوئی مددگار ہے اور شاعر کا سالا بھی جانبدار نہیں ۔”

دلی کے مکانوں کو ڈھایا جانا وہ دردناک طریقہ پر بیان کرتے ہیں ۔ مگر میر مہدی کی آنکھیں دکھنے آ گئی ہیں تو مزاح کا رنگ یوں پھوٹ نکلتا ہے ۔
” تمہاری آنکھوں کے غبار کی وجہ یہ ہے کہ جو مکان دلی میں ڈھائے گئے اور جہاں جہاں سڑکیں نکلیں ، جتنی گرد اڑی ، اس کو آپ نے ازراہِ محبت اپنی آنکھوں میں جگہ دی ۔”

دلی کے لوگوں کی تباہی اور بربادی کے نقوش ان کےخطوط میں بڑی گہری المناکی سے ابھرتے ہیں مگر ان ہی میں حافظ محمد بخش کا لطیفہ بھی آ ہی جاتا ہے۔
” حاکم نے پوچھا ۔ حافظ محمد بخش کون؟ عرض کیا کہ میں ، پھر پوچھا کہ حافظ مموں کون؟ عرض کیا کہ میرا اصل نام محمد بخش ہے ۔ “مموں” مشہور ہے ، فرمایا یہ کچھ بات نہین ، حافظ محمد بخش بھی تم اور حافط مموں بھی تم ۔ سارا جہاں بھی تم ، جو دنیا میں ہے وہ بھی تم ، ہم مکان کس کو دیں ، مسل داخل دفتر ہوئی ، میاں مموں اپنے گھر چلے آئے ۔”

غالب کا ادراک بھی آفاقی ہے ، جس میں دردناک سے دردناک بات کے پس منظر میں بھی ایک شگفتگی ہے ، جو درد کے پیچھے ایک عجیب دائمی مسکراہٹ کو چھپا ہوا دکھاتی ہے ، معلوم ہوتا ہے کہ ایک آفاقی مسکراہٹ کے پردے سے ہیبت ، پریشانی ، درد و غم ، حس ، عظمت ، گناہ ، نیکی کے نقوش ابھرتے ہیں اور تمام تکلیف دہ صورتوں کو بھی ایک آفاقی ہمدردی کی سطح پر نقش و نگار کی طرح دکھاتے ہیں۔ ناامیدی کا اس سے بہتراظہار اور کیا ہو سکتا ہے ؎

رہی نہ طاقتِ گفتار اور اگر ہو بھی
تو کس امید پہ کہئے کہ آرزو کیا ہے

مگر اس شعر کو جتنا پڑھتے جائیے ، اتنی ہی ناامیدی دور ہوتی جاتی ہے ۔ ایک عجیب تسکین کا عالم طاری ہو جاتا ہے ، امید اور ناامیدی آرزو سے وابستہ ہیں مگر یہ شعر ہمیں وہاں لے جاتا ہے ، جہاں آرزو ہی آفاق کے دائمی رنگ میں غائب ہوگئی ، جہاں کائنات کے چہرے پر ایک دائمی مسکراہٹ دائمی شگفتگی کے سوا اور کچھ نہیں ہے ۔ اپنے ایک شعر میں غالب نے کہا ہے ۔

ہم وہاں ہیں جہاں سے ہم کو بھی
کچھ ہماری خبر نہیں آتی

میں نے اپنے مضمون “مزاح اور مزاح نگاری ” میں اعلی ٰ ترین درجہ مزاح کی وضاحت کرتے ہوئے مضمون کو اس شعر پر ختم کیا ہے ، اصل بات یہ ہے کہ غالب کا ہر شعر اس عالم سے نکل کر آتا دکھائی دیتا ہے ۔ اعلیٰ ترین مزاح ایک عجیب قسم کی ہمدردی کا نام ہے جو مزاحیہ تخلیق کو یا مزاح نگار کو ہمارا قریب ترین دوست بنا دیتی ہے ۔ شیکسپئر کی طرح غالب بھی ہمارے قریب ترین مخلص دوست ہو جاتے ہیں ۔ ہماری زندگی کے ہر قدم پر اور ہر موقع پر ان کے شعر ہمارے سامنے آتے ہیں اور ہمای وقتی الجھنوں کو ، دل دوز تکالیف کو ایک نئی تشکیل دے کر اس آفاقی مزاج سے ہم آہنگ کرتے ہیں جو ہمارے لیے تسکین کی آخری پشت پناہ ہے ۔ غالب کے کثرت سے شعر ایسے ہیں ، جو صاف طور پر مزاحیہ ہیں اور ہر ہر قسم کے مزاح کی مثال ان کے اشعار سے دی جا سکتی ہے ۔ پھکڑ لیجئے :۔

غنچہ نا شگفتہ کو دور سے مت دکھا کہ یوں
بوسہ کو پوچھتا ہوں میں منہ سے مجھے بتا کہ یوں

دھول دھپا اس سراپا ناز کا شیوہ نہیں
ہم ہی کر بیٹھے تھے غالب پیش دستی ایک دن

مزاحیہ حالت کے نقشے لیجئے:۔

گدا سمجھ کے وہ چپ تھا مری جو شامت آئے
اٹھا اور اٹھ قدم میں نے پاسباں کے لیے

میں نے کہا” بزم ناز چاہیے غیر سے تہی”
سن کے ستم ظریف نے مجھ کو اٹھا دیا کہ یوں

نفسیات پر مزاح لیجئے:۔

ہوا ہے شہہ کا مصاحب پھرے ہے اتراتا
وگرنہ شہر میں غالب ؔ کی آبرو کیا ہے!

ذکاوت ، لطیف طنز ، چوٹ ، ہر چیز کی کثرت سے مثالیں ملتی چلی جائیں گی ، مگر میں اس امر کی طرف توجہ دلانا چاہتا ہوں اور جس کی اب تک وضاحت نہیں ہوئی ہے ۔ وہ غالب کی فطرت ِ ظریف ہے جو ان کے ہر شعر کو ہمارے سامنے ہر مشکل وقت پر لا کر ہماری ہر مشکل کو آسان کر دیتی ہے اور ہمارے اندر وہ لاپروائی پیدا کر دیتی ہے جو مزاح کی روح ہے ۔ غالب ؔ کے وہ اشعار بھی جو زندگی کی تلخیوں کے تکلیف دہ مناظر پیش کرتے ہیں ، اپنے اندر ایک لطیف مزاح مضمر رکھتے ہیں ۔ جن کا نتیجہ یہ ہے کہ ہم ان کو پڑھ کر دائمی مسکراہٹ کے کیف میں پہنچ جاتے ہیں ۔
غالب کا پورا دیوان اس متحد اور مکمل ادراک کی مثال ہے جس کی بنیادی سطح مزاح ہے ۔ حالی ؔ اس کی تنقیدی تحلیل نہ کر سکے ۔ مگر غالبؔ کو حیوانِ ظریف کہنے سے ان کا مطلب یہی تھا ۔ آسی صاحب نے شرح دیوانِ غالب کے دیباچہ میں کثرت سے شعر غالب ؔ کی پوشیدہ ظرافت کی مثال میں پیش کیے ہیں ۔ غالب مفکر ہیں اور فکر کی گہرائیوں میں جہاں وہ پہنچے ہیں وہاں اقبال کے سوا کوئی اردو شاعر نہین پہنچا ۔ مگر ان کی بڑی سے بڑی فکر میں بھی ایک پرت ظرافت کی ضرور چڑھی نظر آتی ہے۔ ان کے فارسی اشعار میں بیشتر فکر میں ظرافت شامل نہیں نظر آتی ۔ مگر اسی فکری نکتہ کو جب وہ اردو میں ادا کرتے ہیں تو ظرافت شامل ہوئے بغیر نہیں رہتی ۔ مثلاً فارسی کا شعر ہے ؎

گفتنی نیست کہ برغالبؔ ناکام چہ رفت
می تواں یافت کہ ایں بندہ خداوند نہ داشت

یہی بات اردو میں آتی ہے تو یہ صورت اختیار کرتی ہے ؎

زندگی اپنی جب اس مشکل سے گزری غالبؔ
ہم بھی کیا یاد کریں گے کہ خدا رکھتے تھے

یہاں دوسرے مصرع میں مزاح صاف ہے ۔ جنت کے اہم مسئلہ کو وہ مزاح سے حل کرتے ہیں؎

ہم کو معلوم ہے جنت کی حقیقت لیکن
دل کے بہلانے کو غالبؔ یہ خیال اچھا ہے

قیامت کے سلسلے میں مزاح کچھ پوشیدہ ہو جاتا ہے ۔مگر وجود اس کا شعر کی جان نظر آتا ہے؎

نہیں کہ مجھ کو قیامت کا اعتقاد نہیں
شبِ فراق سے روزِ جزا زیاد نہیں

ان کے سنجیدہ سے سنجیدہ اشعار اور غزلیں المیہ کے ساتھ طربیہ کا ویسا ہی امتزاج پیش کرتے ہیں جیسے کہ “کنگ لیئر” میں لیئر پیش کرتا ہے

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

بشکریہ خالد محمود

Charlotte Bronte Quiz

Charlotte Bronte Quiz Questions

1. When was Charlotte Bronte born?
a) 9 March 1814
b) 21 April 1816
c) 30 July 1818
d) 6 November 1812

2. Where was Charlotte Bronte born?
a) Hampshire
b) Dover
c) Tweed
d) Thornton

3. Which school did Charlotte Bronte attend?
a) St. Anne School
b) St. Antony School
c) Clergy Daughters’ School
d) Holy Family School

4. Where did Charlotte Bronte teach?
a) Queen Mary School
b) Miss Patchett’s School
c) Miss Wooler’s School
d) St. Patrick’s School

5. When was Jane Eyre published?
a) 1842
b) 1847
c) 1832
d) 1836

English: Signature of Charlotte Bronte

Signature of Charlotte Bronte (Photo credit: Wikipedia)

6. What was Charlotte Bronte’s pen name?
a) Currer Bell
b) Agatha Christie
c) Acton Bell
d) John Bull

7. When did Charlotte Bronte marry Arthur Bell Nichols?
a) 21 January 1865
b) 29 June 1854
c) 14 August 1842
d) 18 November 1838

8. When did Charlotte Bronte die?
a) 31 March 1855
b) 9 February 1860
c) 18 September 1852
d) 19 December 1848

9. Where did Charlotte Bronte die?
a) Belfast
b) Dublin
c) Haworth
d) London

10. Which novel of Charlotte Bronte was published posthumously?
a) Shirley
b) The Professor
c) Villette
d) The Good Earth

Charlotte Bronte Quiz Questions with Answers

English: Brontë sisters' signatures as Currer,...

Brontë sisters’ signatures as Currer, Ellis and Acton Bell  (Photo credit: Wikipedia)

1. When was Charlotte Bronte born?
b) 21 April 1816

2. Where was Charlotte Bronte born?
d) Thornton

3. Which school did Charlotte Bronte attend?
c) Clergy Daughters’ School

4. Where did Charlotte Bronte teach?
c) Miss Wooler’s School

5. When was Jane Eyre published?
b) 1847

6. What was Charlotte Bronte’s pen name?
a) Currer Bell

7. When did Charlotte Bronte marry Arthur Bell Nichols?
b) 29 June 1854

8. When did Charlotte Bronte die?
a) 31 March 1855

9. Where did Charlotte Bronte die?
c) Haworth

10. Which novel of Charlotte Bronte was published posthumously?
b) The Professor

Flannery O’Connor Quiz

Flannery O’Connor was an American writer. She wrote two novels and 32 short stories. Her Complete Stories won the 1972 U.S. National Book Award for Fiction.

1. What was Flannery O’Connor’s first name?
a) Hilda
b) Mary
c) Stephanie
d) Jane

2. When was Flannery O’Connor born?
a) 25 March 1925
b) 18 May 1922
c) 31 July 1919
d) 30 December 1915

3. Where was Flannery O’Connor born?
a) Boston
b) Atlanta
c) Savannah
d) New Orleans

4. Which college did Flannery O’Connor attend?
a) Bethany College
b) St. John’s College
c) St. Agnes’ College
d) Georgia State College for Women

5. Which university did Flannery O’Connor attend?
a) Harvard
b) Yale
c) Princeton
d) Iowa

6. Which was Flannery O’Connor’s first novel?
a) Wise Blood
b) The Violent Bear It Away
c) Mystery and Manners
d) The Habit of Being

 

7. When did Flannery O’Connor publish A Good Man Is Hard to Find, and Other Stories?
a) 1979
b) 1955
c) 1969
d) 1971

8. Which disease afflicted Flannery O’Connor?
a) Parkinson’s disease
b) Alzheimer’s disease
c) Lupus erythematosus
d) Agranulocytic angina

9. When did Flannery O’Connor die?
a) 22 January 1969
b) 12 June 1978
c) 3 August 1964
d) 5 November 1984

10. Where did Flannery O’Connor die?
a) Reno
b) Milledgeville
c) Albuquerque
d) Portland

Flannery O’Connor Quiz Questions with Answers

 

1. What was Flannery O’Connor’s first name?
b) Mary

2. When was Flannery O’Connor born?
a) 25 March 1925

3. Where was Flannery O’Connor born?
c) Savannah

4. Which college did Flannery O’Connor attend?
d) Georgia State College for Women

5. Which university did Flannery O’Connor attend?
d) Iowa

6. Which was Flannery O’Connor’s first novel?
a) Wise Blood

7. When did Flannery O’Connor publish A Good Man Is Hard to Find, and Other Stories?
b) 1955

8. Which disease afflicted Flannery O’Connor?
c) Lupus erythematosus

9. When did Flannery O’Connor die?
c) 3 August 1964

10. Where did Flannery O’Connor die?
b) Milledgeville

Matthew Flinders Quiz Questions with Answers

Captain Matthew Flinders was a distinguished English navigator and cartographer, who was the first to circumnavigate Australia and identify it as a continent. -Wikipedia

1. When was Matthew Flinders born?
Answer: 16 March 1774

2. Where was Matthew Flinders born?
Answer: Donington

3. When did Matthew Flinders join the Royal Navy?
Answer: 1789

4. Which land did Matthew Flinders circumnavigate when he commanded Norfolk?
Answer: Van Diemen’s Land

5. Which ship did Matthew Flinders command when he circumnavigated Australia?
Answer: Investigator

6. Which name used by Matthew Flinders replaced the name New Holland?
Answer: Australia

7. When was Matthew Flinders in captivity in Ile de France?
Answer: 1803-1810

8. When was A Voyage to Terra Australis published?
Answer: 1814

9. When did Matthew Flinders die?
Answer: 19 July 1814

10. Where did Matthew Flinders die?
Answer: London

Robert Southey Quiz

Robert Southey Quiz Questions

Click here for answers

1. When was Robert Southey born?
a) 8 February 1764
b) 5 April 1776
c) 12 August 1774
d) 4 December 1768

2. Where was Robert Southey born?
a) Lisbon
b) Liverpool
c) Ipswich
d) Bristol

3. Which school did Robert Southey attend?
a) St. George’s School
b) Westminster School
c) St. David’s School
d) Rugby School

4. Which college did Robert Southey attend?
a) Balliol College
b) Trinity College
c) King’s College
d) St. Andrew’s College

5. When did Robert Southey marry X?
a) 28 January 1799
b) 18 June 1798
c) 12 September 1796
d) 14 November 1795

6. When was Joan of Arc published?
a) 1792
b) 1796
c) 1788
d) 1786

7. What did Robert Southey and Samuel Coleridge wanted to establish?
a) Pantisocracy
b) Aristocracy
c) Plutocracy
d) Gerontocracy

8. Which Robert Southey book was published in 1814?
a) After Blenheim
b) Letters from Spain
c) Roderick the Last of the Goths
d) Madoc

9. When did Robert Southey die?
a) 21 March 1843
b) 19 May 1844
c) 23 July 1846
d) 15 October 1848

10. Where did Robert Southey die?
a) Glamorgan
b) Keswick
c) Edinburgh
d) Glasgow

Robert Southey Quiz Questions with Answers

1. When was Robert Southey born?
c) 12 August 1774

2. Where was Robert Southey born?
d) Bristol

3. Which school did Robert Southey attend?
b) Westminster School

4. Which college did Robert Southey attend?
a) Balliol College

5. When did Robert Southey marry X?
d) 14 November 1795

6. When was Joan of Arc published?
b) 1796

7. What did Robert Southey and Samuel Coleridge wanted to establish?
a) Pantisocracy

8. Which Robert Southey book was published in 1814?
c) Roderick the Last of the Goths

9. When did Robert Southey die?
a) 21 March 1843

10. Where did Robert Southey die?
b) Keswick

John Dryden Quiz

John Dryden was an influential English poet, literary critic, translator, and playwright who dominated the literary life of Restoration England to such a point that the period came to be known in literary circles as the Age of Dryden. Walter Scott called him “Glorious John”. He was made Poet Laureate in 1667. Source: Wikipedia

John Dryden Quiz Questions

1. When was John Dryden born? (Dates according to Gregorian calendar)
a) 2 February 1641
b) 15 May 1636
c) 19 August 1631 (Correct)
d) 15 December 1628

2. Where was John Dryden born?
a) Aldwinkle  (Correct)
b) Cardiff
c) Liverpool
d) Dorchester

3. Which school did John Dryden attend?
a) Shrewsbury School
b) Westminster School (Correct)
c) Harrow School
d) St. Paul’s School

 

4. Which poem did John Dryden write for the coronation of Charles II?
a) The Medall
b) The Hind and the Panther
c) Religio Laici
d) To His Sacred Majesty (Correct)

5. Which play did John Dryden write in 1665?
a) Secret Love
b) The Indian Emperour (Correct)
c) All for Love
d) The Conquest of Granada

6. When did John Dryden write Annus Mirabilis?
a) 1672
b) 1675
c) 1667 (Correct)
d) 1701

7. Which poem written by John Dryden regarding successor to Charles II angered Whigs?
a) Absalom and Achitophel (Correct)
b) Eleonara
c) Love Triumphant
d) Cleomenes

 

8. When was John Dryden poet laureate?
a) 1640-1648
b) 1701-1715
c) 1690-1700
d) 1668-1688 (Correct)

9. When did John Dryden die?
a) 26 January 1715
b) 12 May 1700 (Correct)
c) 11 July 1703
d) 12 November 1699

10. Where did John Dryden die?
a) Cambridge
b) London (Correct)
c) Oxford
d) Bristol

William Harvey Quiz

William Harvey Quiz Questions

1. What did William Harvey discover?
a) Blood circulation (Correct)
b) Planetary motions
c) Cortisol
d) Vitamins

2. When was William Harvey born?
a) 31 March 1584
b) 1 April 1578 (Correct)
c) 25 September 1587
d) 30 December 1575

3. Where was William Harvey born?
a) Richmond
b) Plymouth
c) Liverpool
d) Folkestone (Correct)

4. Which college did William Harvey attend?
a) Christ College
b) Gonville and Caius College (Correct)
c) Rhodes College
d) Trinity College

5. Which university did William Harvey attend?
a) London
b) Oxford
c) Padua (Correct)
d) Edinburgh

6. At which hospital did William Harvey serve?
a) St. Bartholomew’s (Correct)
b) St. John’s
c) St. Luke’s
d) St. Andrew’s

7. Who appointed William Harvey physician extraordinary in 1618?
a) George II
b) William IV
c) James I (Correct)
d) Edward IV

8. When did William Harvey publish Exercitatio Anatomica de Motu Cordis et Sanguinis in Animalibus?
a) 1880
b) 1628 (Correct)
c) 1885
d) 1882

9. When did William Harvey die?
a) 18 January 1648
b) 3 June 1657 (Correct)
c) 7 July 1660
d) 12 November 1665

10. Where did William Harvey die?
a) Nuremberg
b) Prague
c) Vienna
d) London (Correct)

James Alfred Van Allen Quiz

James Alfred Van Allen Quiz Questions

Click here for answers

1. When was James Alfred Van Allen born?
a) 4 February 1924
b) 2 April 1918
c) 7 September 1914
d) 28 December 1912

2. Where was James Alfred Van Allen born?
a) Mount Pleasant
b) Silver Spring
c) Dartmouth
d) Charlestown

3. Which college did James Alfred Van Allen attend?
a) William and Mary College
b) Iowa Wesleyan College
c) St. Dominic’s College
d) Sacred Heart College

4. What was Aerobee which James Alfred Van Allen helped develop?
a) Missile
b) Satellite
c) Rocket
d) Destroyer

5. When was James Alfred Van Allen professor of physics at the University of Iowa?
a) 1951-1985
b) 1942-1946
c) 1946-1950
d) 1988-1998

6. What was the year 1957-1958?
a) Second International Polar Year
b) International Geophysical Year
c) International Year of Youth
d) International Year of Telecommunications

7. When was Explorer launched?
a) 26 July 1969
b) 12 June 1964
c) 31 January 1958
d) 12 November 1952

8. When did James Alfred Van Allen discover Van Allen radiation belts?
a) 1948
b) 1972
c) 1962
d) 1958

9. When did James Alfred Van Allen die?
a) 26 March 2008
b) 9 August 2006
c) 28 May 2004
d) 14 October 2012

10. Where did James Alfred Van Allen die?
a) New York
b) San Francisco
c) Los Angeles
d) Iowa City

James Alfred Van Allen Quiz Questions with Answers

1. When was James Alfred Van Allen born?
c) 7 September 1914

2. Where was James Alfred Van Allen born?
a) Mount Pleasant

3. Which college did James Alfred Van Allen attend?
b) Iowa Wesleyan College

4. What was Aerobee which James Alfred Van Allen helped develop?
c) Rocket

5. When was James Alfred Van Allen professor of physics at the University of Iowa?
a) 1951-1985

6. What was the year 1957-1958?
b) International Geophysical Year

7. When was Explorer launched?
c) 31 January 1958

8. When did James Alfred Van Allen discover Van Allen radiation belts?
d) 1958

9. When did James Alfred Van Allen die?
b) 9 August 2006

10. Where did James Alfred Van Allen die?
d) Iowa City

Profile: Maulan Sami-ul-Haq (1937-2018) | Religious Scholar and Politician

Maulana Sami-ul-Haq (1937-2018)

Name: Maulana Samiul Haq
Age: 81 Years
Date of Birth: December 18, 1937 (Akora Khattak)
Date of Assassination: November 02, 2018
Education: Sanad-e-Fazilat-o-Faraghat and Sanad Daura Tafseer-e-Quran from Darul Uloom Haqqania – Sheikh-ul-Hadith (honorary) from Darul Uloom Deoband
Profession: Religious Scholar and Politician
Former senator from 1985-1991 and 1991-1997

Profile Maulana Sami-ul-Haq:

Maulana Samiul Haq was the Chancellor and Director of “Dar al-ulum Haqania“. Maulana Sami ul Haq was one of the most influential religious scholar and was knows as “Father of Taliban” because of his close ties with talibans in both Afghanistan and Pakistan. Maulana Sami ul Haq was also the chief of his own faction of the Jamiat Ulema-i-Islam. Maulan Sami-ul-Haq was one of the founders of Pakistan’s Mutahida Majlis-e-Amal (MMA), which was coalition of six religious parties. He himself belonged to Islami Jamhooria Ittehad. he had been aligned with the ruling party Pakistan Tehreek-e-Insaf to work on the implementation of various reforms in the mainstream madrassa education.
Assassination:
Maulana was stabbed multiple times in his room and was found dead in the pool of bed by his driver, Haqqani.

Kurt Waldheim Quiz

Kurt Waldheim Quiz Questions

1. When was Kurt Waldheim secretary general of United Nations?
a) 1972-1981
b) 1945-1949
c) 1951-1960
d) 1961-1970

2. When was Kurt Waldheim born?
a) 12 January 1919
b) 7 April 1914
c) 17 July 1918
d) 21 December 1918

3. Where was Kurt Waldheim born?
a) Linz
b) Graz
c) Sankt Andra-Worden
d) Weiz

4. When did Kurt Waldheim lead Austria’s first delegation to United Nations?
a) 1953
b) 1957
c) 1955
d) 1954

5. Where did Kurt Waldheim represent Austria as minister plenipotentiary?
a) Canada
b) India
c) Pakistan
d) Australia

6. What was Kurt Waldheim’s post in 1968-1970?
a) Attorney General
b) Prime Minister
c) Foreign Minister
d) Home Secretary

7. When was Kurt Waldheim ambassador to United Nations?
a) 1952-1954
b) 1956-1958, 1961-1962
c) 1964-1968, 1970-1971
d) 1988-1992

8. When was Kurt Waldheim President of Austria?
a) 1982-1984
b) 1986-1992
c) 1948-1952
d) 1994-1996

9. When did Kurt Waldheim die?
a) 12 February 2000
b) 14 June 2007
c) 18 September 2009
d) 28 November 1995

10. Where did Kurt Waldheim die?
a) Wolfsberg
b) Vienna
c) Hallein
d) Bruck

Kurt Waldheim Quiz Questions with Answers

1. When was Kurt Waldheim secretary general of United Nations?
a) 1972-1981

2. When was Kurt Waldheim born?
d) 21 December 1918

3. Where was Kurt Waldheim born?
c) Sankt Andra-Worden

4. When did Kurt Waldheim lead Austria’s first delegation to United Nations?
c) 1955

5. Where did Kurt Waldheim represent Austria as minister plenipotentiary?
a) Canada

6. What was Kurt Waldheim’s post in 1968-1970?
c) Foreign Minister

7. When was Kurt Waldheim ambassador to United Nations?
c) 1964-1968, 1970-1971

8. When was Kurt Waldheim President of Austria?
b) 1986-1992

9. When did Kurt Waldheim die?
b) 14 June 2007

10. Where did Kurt Waldheim die?
b) Vienna

Share